حسن کا انعام یا پرچی کا کارنامہ ۔۔۔۔۔؟ اداکارہ مہوش حیات کو تمغہ امتیاز کیوں دیا جا رہا ہے ؟ اپنی ہی برادری والوں نے نامور اداکارہ کو رسوا کرکے رکھ دیا

" >

لاہور(ویب ڈیسک) نامور پاکستانی اداکارہ مہوش حیات کو تمغہ امتیاز ملنے پر شوبز سے وابستہ افراد نے انتہائی حیرانی اور غم و غصے کا اظہار کیا ہے ایک طرف تو اس شوبز برادری نے ملک کے سب سے بڑے سول ایوارڈ بارے سوالیہ نشان کھڑا کر دیا ہے۔ کئی لوگوں کا کہنا ہے کہ

آخر بے شمارسینئر فنکاروں کو نظرانداز کرکے ایک جونیئراداکارہ کو تمغہ امتیاز جیساایوارڈ دیا گیا جب کہ شوبز کے میدان میں درجنوں لوگ اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا چکے ہیں ۔یاد رہے کہ اس بار یوم پاکستان کے موقع پر مختلف شعبوں میں نمایاں خدمات سرانجام دینے والی127شخصیات کو سول ایوارڈ دینے کا اعلان کیا گیا ہے جن میں شوبزانڈسٹری سے سجاد علی ،ریما خان،بابرہ شریف، افتخارٹھاکر، شبیرجان،عطاء اللہ عیسیٰ خیلوی اور مہوش حیات کو منتخب کیا گیا ہے۔سجاد علی ،بابرہ شریف اور عطا ء اللہ عیسیٰ خیلوی کوستارہ امتیاز،ریماخان ،شبیرجان اور افتخارٹھاکر کو پرائیڈ آف پرفارمنس جبکہ مہوش حیات کو تمغہ امتیاز دینے کا اعلان کیا گیاہے۔ خاص بات یہ ہے کہ کراچی اور لاہور سے تعلق رکھنے والے بہت سے ایسے فنکار جو پچاس پچاس سال سے اس انڈسٹری میں کام کررہے ہیں انہیں آج تک کوئی سول ایوراڈ نہیں ملا لیکن حکومت نے ایک جونیئر اداکارہ کو یہ ایوارڈ دے کر ایک نئی تاریخ رقم کی ہے۔دوسری طرف سوشل میڈیا پر یہ سوال اٹھایا جارہا ہے کہ آخر مہوش حیات نے ایسی کون سی خدمات سرانجام دی ہیں جن کے لئے تمغہ امتیاز دینے کا اعلان کیا گیاہے۔اس بارے میں ابھی مہوش حیات کا موقف توسامنے نہیں آیا لیکن سوشل میڈیا پر لوگوں کی اکثریت اپنے دل کی بھڑاس نکال رہی ہے۔زیادہ تر لوگوں نے اسے ’’پرچی‘‘کا کمال قرار دیا جبکہ کچھ نے اس کا کریڈٹ مہوش حیات کے ’’حسن‘‘کو دیا ہے۔سوشل میڈیا پر احسن زلفی نامی ایک صارف نے لکھا ہے کہ اگر مہوش حیات تھوڑی محنت اور کرلیتی تو شاید انہیں نشان حیدر بھی مل جاتا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں